دن کی روشنی میں ہم دیکھ نہیں سکتے بدر

میں عقل کی روشنی میں آنہیں سکتا نظر
دن میں جو جاہیں بھی تو ہم دیکھ نہیں سکتے بدر

Comments

Popular posts from this blog

نئی ٹیکسی

بر بحر "گلس ہنس دیئے نقاب الٹ دی بہار نے"

Putting Ideas in the public