Sunday, 2 February 2014

زندگی تیرے لیئے کیا کیا کِیا ، کیا نہ کِیا

زندگی تیرے لیئے کیا کیا کِیا ، کیا نہ کِیا
حسرتا تیرے لیئے کیا کیا کِیا ، کیا نہ کِیا

تم سے تھا وعدہ ہمارا بھول جائیں گے تمہیں
ہم نے کرنا تھا وفا وعدہ کِیا ، کیا نہ کِیا

ہیوسٹن
۲۰۰۳

No comments:

Post a Comment